پرائیویٹ سکولز ریگولیٹری اتھارٹی پختونخوا کے پالیسیاں ملاکنڈ ڈویژن میں لاگو نہیں

ہفتہ 14 اپریل 2018


بٹ خیلہ (نمائندہ خصوصی)پرائیویٹ سکولز ریگولیٹری اتھارٹی خیبر پختونخوا کے فیصلے اور پالیسیاں ملاکنڈ ڈویژن میں لاگو نہیں ہوسکتی اسلئے یہاں کے نجی تعلیمی ادارے حسب سابق اپنے متعلقہ ایجوکیشن بورڈزکے ساتھ رجسٹریشن ایفیلیشن اور رینیول کے سلسلے میں رابطہ کریں ایف آئی ڈی کے فنڈڈادارے انڈپنڈنٹ مانیٹرنگ یونٹ کی کسی بھی قسم کی مداخلت برداشت نہیں کی جائے گی ان خیالات کا اظہار اپنے نجی تعلیمی اداروں کی نمائندہ تنظیم پرائیویٹ ایجوکیشن نیٹ ورک کے صوبائی سینئر نائب صدر امجد علی شاہ نے اپنے اخبار ی بیان میں کیا انھوں نے کہا کہ ملاکنڈ ڈویژن کی مخصوص آئینی و قانونی حیثیت کی وجہ سے کوئی قانون اور فیصلے گورنر کی مں طوری کے بغیر لاگو نہیں ہو سکتا اسلئے صوبائی اسمبلی کے ایکٹ کے تحت قائم پرائیویٹ سکولز ریگولیٹری اتھارٹی کے کسی بھی فیصلے اور پالیسی کا نفاذ نہیں ہوسکتا ہے جبکہ دوسری جانب پورے صوبے سمیت ملاکنڈ ڈویژن کے تمام نجی ادارے پی ایس آر اے کے ایم ڈی کے آمرانہ یکطرفہ فیصلوں کو قبول کرنے کیلئے تیار نہیں انھوں نے کہاکہ صوبے کے نجی اداروں کی کارکردگی گورنمنٹ سکولوں سے بدرجہ ہابہتر اور اطمینان بخش ہے جبکہ ٹیچنگ سٹاف امتحانی نظام اور سہولتوں بارے محکمہ تعلیم اور بورڈز اپنا کام کر رہے ہیں جبکہ ان اداروں کی نگرانی کا ہمارا اپنا انتہائی موثر نظام بھی موجود ہے اسلئے ڈی ایم اوز کے ذریعے اپنے اساتذہ کی حاضری اور فرنیچرکے اعداد وشمار اکٹھا کرنے کی اجازت نہیں دی جائے گی۔
 


کہانی کو شیئر کریں۔


آپ یہ بھی دیکھنا پسند کریں گے

اپنی رائے کا اظہا ر کریں۔



Total Comments (0)

تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ مانندآئینہ محفوظ ہیں۔

بغیر اجازت کسی قسم کی اشاعت ممنوع ہے

Developed by : Murad Khan